Heart Touching Poetry by Ahmad Nadeem Qasmi – Urdu Shayari

Heart Touching Poetry by Ahmad Nadeem Qasmi

Kon Roye Ga Mare Gnaza Pr

Hay!Kon Kay Ga Wo Mere Jan Tha

-::-

کون روئے گا میرے جنازی پر

کون کے گا وہ میرے جان تھا

—————

Kmal Ka Ta na Diya Aaj Dil Ne

Murshid!Kahta Hai Tera Koi Hai Tou Kaha Hai

-::-

کمال کا تا نا دیا آج دِل نے

مرشد ! کہتا ہے تیرا کوئی ہے تو کہا ہے

——————

Ishq Jis Taraf Nigah Kr Gaya

jompre Ho Ya Mahal Tabah Kr Gaya

-::-

عشق جس طرف نگاہ کر گیا

جومپری ہو یا محل تباہ کر گیا

—————–

Wo Tou Kahti Thi Main Tum Pai Marti Ho

Murshid!Wo Mar ti Kiu Nhi

-::-

وہ تو کہتی تھی میں تم پائی مرتی ہو

مرشد ! وہ مر تی کیوں نہیں

—————-

Bhegay Zmeeno Asman Magar Sokha Raha Ik Mera Hi Ghar

Dunya Hai Teri Nigahon Main Bs Ik Main hi Na Aya Nazar

-::-

بھیگے زمینو آسْمان مگر سوکھا رہا اک میرا ہی گھر

دنیا ہے تیری نگاہوں میں بس اک میں ہی نا آیا نظر

—————-

Muje kbhi Kbhi Lagta Hai Main Koi Sitara Ho

Kiun k Muje Tot ta Howa Daikh Kr Aksr Logo Ki Hwahsh Pori Ho Jati Hai

-::-

مجھے کبھی کبھی لگتا ہے میں کوئی ستارہ ہو

کیوں کے مجھے ٹوٹ تا ہوا دیکھ کر اکثر لوگوں کی حواحش پوری ہو جاتی ہے

———————

Us Ny Kaha Tha Kuch Pane K Liye Kuch Kho Na Prta hai

Tou Uss Sy Pata Kr Ky Batao Na Muje Kho Ky Kya Paya Us Ny

-::-

اس نے کہا تھا کچھ پانے کے لیے کچھ کھو نا پڑتا ہے

تو اس سے پتہ کر کے بتاؤ نا مجھے کھو کے کیا پایا اس نے

——————–

Ap Ko Nind A Jae Tou So Jaya Kro

Aadhi raat Ko jagny Sy Muhabbat Wapis Nhi Milti

-::-

آپ کو نیند آ جائے تو سو جایا کرو

آدھی رات کو جاگنے سے محبت واپس نہیں ملتی

———————

Wo Is Kadar Roth gaya Muj Sy

Jaisy Kisi Aur Ny Mana Liya Ho

-::-

وہ اِس قدر روٹھ گیا مجھ سے

جیسے کسی اور نے منع لیا ہو

—————–

Wo Bhi Koi dor Tha Ye Bhi Koi Dor Hai

Jis Ki Duniya Kbhi Hm Thy Aaj Us Ka Jaha Koi Aur Hai

-::-

وہ بھی کوئی دور تھا یہ بھی کوئی دور ہے

جس کی دُنیا کبھی ہم تھے آج اس کا جہاں کوئی اور ہے

——————

Sirf Dil Tuta Hai Sans Nhi Dharkano Main Rawani Abhi Baki Hai

Pyar Ka Kisa Khatam Ho Gaya Tou Kya Zindagi Ki Kahani Abhi Baki Hai

-::-

صرف دِل ٹوٹا ہے سانس نہیں دھڑکنوں میں روانی ابھی باقی ہے

پیار کا قصہ ختم ہو گیا تو کیا زندگی کی کہانی ابھی باقی ہے

——————–

Teri Muhabbat Ki Hifazat Kuch Is Tarah Sy ki Maine

Murshid!Jb Kisi Ny Pyar Sy Daikha Tou Nazrain Jhoka Li Maine

-::-

تیری محبت کی حفاظت کچھ اِس طرح سے کی میں نے

مرشد ! جب کسی نے پیار سے دیکھا تو نظریں جھکا لی میں نے

—————-

Main Muhabbat Main Hyant Nhi Krta

Murshid!Warna Us Ki Dost Bhi Bohat Pyari Hai

-::-

میں محبت میں حیانت نہیں کرتا

مرشد ! ورنہ اس کی دوست بھی بہت پیاری ہے

——————-

Us Ko Lagta Hai Muje Dard nhi Hota Khair Choro

Baat ko Kya Barhana Nhi Hota Tou Nhi Hota

-::-

اس کو لگتا ہے مجھے درد نہیں ہوتا خیر چھوڑو

بات کو کیا بڑھانا نہیں ہوتا تو نہیں ہوتا

——————–

Dard Chopana A ta hai Muje Main Tou Gam Main Bhi Muskura Lyte Ho

Koi Kaise Ky Skta Hai Bey Dard Ho Main Tou Dosro ky Dukh Main Bhi Anso Baha Lyte Ho

-::-

درد چھپانا آ تا ہے مجھے میں تو غم میں بھی مسکرا لیتی ہو

کوئی کیسے کے سکتا ہے بے درد ہو میں تو دوسروں کے دکھ میں بھی آنسو بہا لیتی ہو

—————–

Tum Jo Ankho Ki Udasi Ka sabab Pochtay Ho

Murshid!Yh Kinare Hain Aur Kinaro Pay Nami Rahte Hai

-::-

تم جو آنکھوں کی اُداسی کا سبب پوچھتے ہو

مرشد ! یہ کنارے ہیں اور کناروں پے نمی رہتے ہے

———————–

Hme Chahne Walo Ki Tadad Bharti Ja Rhi Hai

Murshid!Nafraat Krny Walo Sy Kaho Apni Duwa o Main Asar Lao

-::-

ہمیں چاہنے والو کی تعداد بھرتی جا رہی ہے

مرشد ! نفرت کرنے والو سے کہو اپنی دعا و میں اثر لاؤ

—————

Kh Main Kaise Guftago sy Kisi Gair Ko Apna Banata Ho

Murshid!Idhar Aao Yaha Baitho Main Tumhe Jado Dikha Ta Ho

-::-

کہ میں کیسے گفتگو سے کسی غیر کو اپنا بناتا ہو

مرشد ! ادھر آؤ یہاں بیٹھو میں تمہیں جادو دکھا تا ہو


——————-

Kh Muje Sharab Pila Kr Bey Iman Na Kr Saqi

Hy Murshid!Madhosh Hi Krna Hai Tou Zikre Yr Kr

-::-

کہ مجھے شراب پلا کر بے ایمان نا کر ساقی

مرشد ! مدھوش ہی کرنا ہے تو زکر یار کر

——————

Murshid!Wo Muje Zinda Daikh Kr Achank Sy Bolay

Hy Murshid!Bd Duwa Nhi Lagi Tumhain

-::-

مرشد ! وہ مجھے زندہ دیکھ کر اچانک سے بولے

ہے مرشد ! بد دعا نہیں لگی تمہیں

——————–

Kisi Ny Kaha Dunya Pyar Sy Chlti Hy Kisi Ny Kaha Dosti Sy Chalti Hy

Jb Azmaya Tou Pata Chala Dunya Mtlb Sy chlti Hy

-::-

کسی نے کہا دنیا پیار سے چلتی ہے کسی نے کہا دوستی سے چلتی ہے

جب آزمایا تو پتہ چلا دنیا مطلب سے چلتی ہے

—————-

Agr Gsm Dy Dene Sy Muhabbat Brti Hy

Tou Sb Sy Zyada Ashiq Gsm Baichne Walo ky Hoty

-::-

اگر جسم دے دینے سے محبت برتی ہے

تو سب سے زیادہ عاشق جسم بیچنے والو کے ہوتے

——————-

Khuda Kray Main Mar Jau Pr Tuje Khabr Tk Na Mily

Tou Dhondta Rhe Muje Paglo Ki Tarha Pr Tuje qbr Tk Na Mile

-::-

خدا کرے میں مر جاؤ پر تجھے خبر تک نا ملے

تو ڈھونڈتا رہے مجھے پاجلو کی طرح پر تجھے قبر تک نا ملے

——————-

Teno Wekh Wekh K Main Nhi Rjda Kisi aur Nu Main Ki Tka

Main Sari Dunya Kum K Wekhe Ye Meno Maar Mukaya Teriya Akha

-::-

تینو ویکھ ویکھ کے میں نہیں رجدا کسی اور نوں میں کی تکا

میں ساری دنیا کم کے ویخی یہ مینو مار موکایا تیریا اکھا

——————–

Murshid!Hm Jis K Play Pr Gy Na

Us Ka Tou Bera Grk Ho Jana Hy

-::-

مرشد ! ہم جس کے پلے پر گے نا

اس کا تو بیڑا جرک ہو جانا ہے

——————

Smndr Bhi Teri Tarha Mtlbe Nkla

Jaan Lay Kr Lehro Ko Khta Hy k Lash Ko Kinary Lga do

-::-

سمندر بھی تیری طرح متلبی نکلا

جان لے کر لہروں کو کہتا ہے کے لاش کو کنارے لگا دو

—————–

Wo Mera Sub Kuch Hy Bs Mqdr Nhi

Kash Wo Mera Kuch Na Hota Bs Mqdr Hota

-::-

وہ میرا سب کچھ ہے بس مقدر نہیں

کاش وہ میرا کچھ نا ہوتا بس مقدر ہوتا

—————–

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *